کوئی شک نہیں ہونا چاہیے۔۔نئی افغان حکومت میں خواتین کی کافی تعداد ہوگی، ستانکزئی

Sep 01, 2021 | 19:43:PM
 کوئی شک نہیں ہونا چاہیے۔۔نئی افغان حکومت میں خواتین کی کافی تعداد ہوگی، ستانکزئی
کیپشن: شیر محمد عباس ستانکزئی(فائل فوٹو)
Stay tuned with 24 News HD Android App
Get it on Google Play

(24 نیوز)قطر میں طالبان سیاسی دفتر کے نائب سربراہ شیر محمد عباس ستانکزئی نے کہاہے کہ نئی افغان حکومت میں خواتین بھی شامل ہوں گی۔

میڈیارپورٹس کے مطابق شیر محمد عباس ستانکزئی نے کہا کہ نئی افغان حکومت میں گزشتہ 20 برس حکومت میں رہنے والے افراد شامل نہیں ہوں گے، نئی افغان حکومت جامع اور افغانستان کی تمام اقوام کی نمائندہ ہوگی، نئی افغان حکومت میں تقوی دار، پرہیزگار اور تعلیم یافتہ افراد شامل ہوں گے۔افغان طالبان کے مذاکراتی ٹیم کے رکن نے یہ بھی کہا کہ اس میں کوئی شک نہیں ہے کہ نئی حکومت میں خواتین کی کافی تعداد ہوگی، یہ میں نہیں کہہ سکتا کہ خواتین بڑے منصب پر فائز ہوں گی یا نہیں۔انہوں نے کہا کہ کابل ایئرپورٹ پر امریکی انخلا کے بعد بحالی کا کام جاری ہے، ایئرپورٹ دو دن میں فعال ہوجائے ہوگا۔

شیر محمد عباس ستانکزئی نے برطانوی نشریاتی ادارے سے گفتگو میں کہا کہ کابل ایئرپورٹ کی بحالی، مرمت پر 25 سے 30 ملین ڈالر خرچہ ہوگا، ایئرپورٹ کی بحالی اور مرمت پر قطر اور ترکی کی جانب سے مدد کی جائے گی۔انہوں نے کہا کہ تین دن میں نئی افغان حکومت کا اعلان ہوجائے گا، قانونی دستاویزات والوں کو افغانستان سے باہر جانے دیا جائے گا ، بغیر پاسپورٹ اور ویزے کے کسی کو بھی افغانستان سے باہر نہیں جانے دیا جائے گا۔انہوں نے کہا کہ ہمیں یقین ہے کہ سب اس افغان حکومت کو تسلیم کریں گے، افغان متحد و متفق ہیں ،دنیا صورتحال سے فائدہ اٹھائے، ہماری حکومت کو تسلیم کر لیں، افغانستان کے ہمسایہ ممالک کو بھی اس صورتحال سے فائدہ اٹھانا چاہیے۔

یہ بھی پڑھیں:طالبان کی سپریم کونسل کااجلاس ختم،نئی اسلامی حکومت سےمتعلق اہم فیصلے