مشرف واپس آکر قانون کاسامنا کریں ، اعظم نذیر تارڑ

Jun 23, 2022 | 18:32:PM
پرویز مشرف ، وطن واپسی
کیپشن: پرویز مشرف فائل فوٹو
Stay tunned with 24 News HD Android App
Get it on Google Play

(24نیوز)وفاقی وزیر برائے قانون و انصاف اعظم نذیر تارڑ نے کہا کہ حکومت سابق صدر پرویز مشرف کو وطن واپس لانے کیلئے سہولت فراہم کرنا چاہتی ہے،پرویز مشرف کو سزا ہوئی تھی وہ واپس آئیں اور عدالت انکے معاملے کو دیکھے،پرویز مشرف کو واپس آنا چاہیے اور قانون کا سامنا کریں۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ میں واقع پاکستان بار کونسل کے آفس میں ڈائریکٹوریٹ آف لیگل ایجوکیشن کے افتتاح کے موقع پر وفاقی وزیر قانون اعظم نذیر تارڑ نے کہا کہ وزیر اعظم شہباز شریف کی خصوصی ہدایت ہے کہ بار کونسلز کیساتھ تعاون کیا جائے،ہمیشہ جمہوریت کیلئے بار کونسلز نے سب سے کلیدی کردار ادا کیا،امریت کے دور میں بار کونسلز نے کئی مشکلات کا سامنا کیا۔

انہوں نے کہا کہ رول آف لاءاور گوڈ گورننس کیلئے وکلا کا کردار بہت اہم ہے،لیگل ایجوکیشن ڈائریکٹوریٹ قائم کرنے کیلئے سپریم کورٹ نے حکم دیا،سات رکنی اسٹاف بھی ڈائریکٹوریٹ کا تعینات کر دیا گیا ہے،لاءکالجز سے متعلق تمام معلومات ڈائریکٹوریٹ سے لی جاسکتی ہیں،رجسٹرڈ لا کالجز کی معلومات بھی ڈائریکٹوریٹ کی ویب سائیٹ سے لی جاسکتی ہیں۔ وزیر قانون نے کہا کہ وزیر اعظم شہباز شریف نے صوابدیدی فنڈ سے گرانٹ ان ایڈ کو چار کروڑ روپے دیئے ہیں ،سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن کو بھی چار کروڑ روپے کی گرانٹ دے دی ہے۔

اس موقع پر صدر سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن احسن بھون نے کہا کہ وکلا کے مسائل حل کرنے کیلئے احسن اقدام پر وفاقی وزیر قانون کا شکریہ ادا کرتے ہیں،سپریم کورٹ بار ہاوسنگ سوسائٹی کیلئے وزیر اعظم پاکستان نے خصوصی اقدامات کی ہدایت کی ہے،وزیر اعظم اور وزیر قانون سے مطالبہ کرتا ہوں کہ قاضی فائز عیسی کیس میں نظرثانی اپیل واپس لی جائے،جسٹس قاضی فائز عیسی کیخلاف نظرثانی اپیل واپس لیکر عدلیہ کو آزاد رہنے دیا جائے۔ صدر سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن نے کہا کہ پرویز مشرف کی سزا معطلی کیخلاف اپیل سپریم کورٹ سماعت کیلئے مقرر کرے،پرویز مشرف کیخلاف قانون کے مطابق کاروائی ہونی چاہیے۔

یہ بھی پڑھیں:غریب عوام کے لیے بری خبر، پیٹرولیم مصنوعات پر ریگولیٹری ڈیوٹی عائد