افغان نائب صدر امراللہ صالح کے الزامات درست نہیں، وزارت خارجہ

Jul 16, 2021 | 11:42:AM
افغان نائب صدر امراللہ صالح کے الزامات درست نہیں، وزارت خارجہ
کیپشن: فائل فوٹو

(24 نیوز) پاکستان کی وزارت خارجہ نے افغان نائب صدر امراللہ صالح کے الزامات مسترد کرتے ہوئے کہا کہ ہے ہم خودمختار افغان سرزمین پر کسی بھی ایکشن کے لئے خود افغان حکومت کے حق کو جائز تصور کرتے ہیں۔

ترجمان وزارت خارجہ کا کہنا ہے کہ افغانستان کی جانب سے پاکستان کو افغان سرزمین پر چمن بارڈر کے دوسری جانب ایئر آپریشن سے متعلق آگاہ کیا تھا، پاکستان نے مثبت جواب دیتے ہوئے افغان سرزمین پر کسی بھی کارروائی کو اس کا حق قرار دیا تھا۔ ترجمان نے کہا ہےکہ  جاری حالات کے تناظر میں کسی بھی ممکنہ حادثہ کے ہیش نظر پاکستان نے اپنی جانب حفاظتی اقدامات مکمل کئے،تمام انتظامات اپنے لوگوں کے تحفظ کے لئے پاکستان کی سرزمین پر کئےگئے۔ہم خودمختار افغان سرزمین پر کسی بھی ایکشن کے لئے خود افغان حکومت کے حق کو جائز تصور کرتے ہیں۔ ترجمان وزارت خارجہ کے مطابق  پاک فضائیہ نےاس حوالے سے افغان فضائیہ کے ساتھ کسی قسم کی پیغام رسانی نہیں کی،  افغان نائب صدر کے الزامات درست نہیں،ایسے الزامات افغان قیادت میں افغان عوام کی منشا کے مطابق مسئلہ کے حل کے لئے پاکستان کہ سنجیدہ کوششوں  سے انحراف ہیں۔ ترجمان نے مزید کہا کہ بعد ازاں پاکستان نے فرار ہو آنے سالے 40 اے این ڈی ایس کے افسران اور جوانوں کو ریسکیو کر کے عزت کے ساتھ افغان حکومت کے حوالے کئے،پاکستان نے اے این ڈی ایس ایف کی جانب سے درخواست پر ہر قسم کی لاجسٹک مدد فراہم کرنے کی پیشکش بھی کی۔ وزارت خارجہ کے ترجمان کا کہنا ہے کہ  ڈی ٹریک کرنے والوں کی موجودگی کے باوجود پاکستان افغان امن کوششوں کی کامیابی کے لیے مدد کرتا رہے گا۔