پنجاب اسمبلی تشدد کیس ، پولیس تذبذب کا شکار

Aug 27, 2022 | 19:07:PM
پنجاب اسمبلی ہنگامہ آرائی ، کیس اہم پیشرفت
کیپشن: پنجاب اسمبلی کی فائل فوٹو
Stay tuned with 24 News HD Android App
Get it on Google Play

(24نیوز)پنجاب اسمبلی ہنگامہ آرائی کیس میں پولیس تذبذب کا شکارہے ۔

تفصیلات کے مطابق پنجاب اسمبلی کا پہلا مقدمہ مسلم لیگ ق اور تحریک انصاف کے رہنماوں پر درج ہوا۔تبدیلی حکومت کے بعد مقدمہ میں کراس ورشن ہوگیا۔کراس ورشن میں مسلم لیگ ن کے گیارہ ایم پی ایز نامزد کر دیئے گئے۔۔پنجاب اسمبلی ہنگامہ آرائی کی فوٹیجز پولیس کو دی گئیں تھیں۔متعدد فوٹیجز میں پی ٹی آئی کارکنان پولیس پر تشدد کرتے دکھائی دئیے۔

پنجاب اسمبلی میں پولیس نے کارروائی سابق آئی جی پنجاب کے حکم پر کی ۔آئی جی پنجاب سمیت اعلی افسران خود پنجاب اسمبلی میں موجود تھے۔اب تحریک انصاف کی جانب سے مسلم لیگی ایم پی ایز کو قصور وار ثابت کرنے کے لیے پولیس پر دباو شروع ہو گیا۔فوٹیجیز اور حقائق کو کیسے تبدیل کیا جائے جس پر انویسٹی گیشن ونگ تذبذب کا شکار ہے۔مسلم لیگ ن کے اراکین اسمبلی میں پرتشدد کارروائی میں دکھائی نا دئیے۔

یہ بھی پڑھیں:نوازشریف کی پارٹی رہنماؤں کی اہم ہدایات جاری