وفاقی حکومت کا صدر عارف علوی کو بڑا جھٹکا

Aug 03, 2022 | 14:34:PM
صدر مملکت عارف علوی،قومی اسمبلی،وفاقی حکومت
کیپشن: نیب قانون کے سیکشن 16 میں بھی ترمیم کر دی گئی/ فائل فوٹو، گوگل سورس
Stay tunned with 24 News HD Android App
Get it on Google Play

(24 نیوز) قومی اسمبلی سے احتساب آرڈیننس 1999 میں ترمیم کا بل دوئم 2022 منظور کر لیا گیا۔ اس ترمیم سے احتساب عدالتوں کے ججوں کی تقرری کیلئے صدر کا اختیار ختم ہوگیا۔

یہ بھی پڑھیں:فارن فنڈنگ کیس: حکومت کا بڑا فیصلہ

احتساب عدالت کے ججوں کی تقرری اب وفاقی حکومت کرے گی۔ اس ترمیم سے پراسیکیوٹر جنرل کی مدت ملازمت میں 3 سال تک توسیع کی جا سکے گی۔

 نیب قانون کے سیکشن 16 میں بھی ترمیم کر دی گئی ہے، جس کے تحت کسی ملزم کیخلاف مقدمہ وہیں کی احتساب عدالت میں چلےگاجہاں جرم کااتکاب ہوا ہو۔

نیب قانون کے سیکشن 19 ای میں بھی ترمیم کر دی گئی اور نیب کو ہائی کورٹ کی مدد سے نگرانی کی اجازت دینے کا اختیار واپس لے لیا گیا ہے۔

بل کے متن میں کہا کہ نیب ملزمان کیخلاف تحقیقات کیلئے کسی سرکاری ایجنسی سے مدد نہیں لے سکتا، ملزم کو خلاف الزامات سے آگاہ کیا جائے گا تاکہ وہ اپنا دفاع کر سکیں۔

اسلام آباد:نیب قانون کے سیکشن 31 بی میں بھی ترمیم کر دی گئی ، جس کے تحت چیئرمین نیب فرد جرم ہونےسےقبل ریفرنس ختم کرنے کی تجویز کر سکیں گے۔