پیکا آرڈیننس۔لگتا ہے وزیراعظم کی کسی نے ٹھیک سے معاونت نہیں کی۔ہائیکورٹ

Mar 01, 2022 | 13:26:PM
پیکا آرڈیننس۔لگتا ہے وزیراعظم کی کسی نے ٹھیک سے معاونت نہیں کی۔ہائیکورٹ
کیپشن: چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ
Stay tunned with 24 News HD Android App
Get it on Google Play

  (24 نیوز)اسلام آباد ہائیکورٹ نے پیکا آرڈیننس کیخلاف لاہورہائیکورٹ بارکے صدرکی درخواست دیگر پٹیشنزکے ساتھ یکجا کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے اٹارنی جنرل کونوٹس جاری کردیا۔

چیف جسٹس اطہرمن اللہ نے صدرلاہورہائیکورٹ بارکے مقصود بٹرکی درخواست پرسماعت کی۔ چیف جسٹس نے کہا کہ صدر لاہورہائیکورٹ بارکی درخواست ضرورسنیں گے۔ وکیل بولے کہ درخواست میں پہلے سے دائرپٹیشنزسے ہٹ کربھی دونئےنکات اٹھائےگئےہیں۔ ایف آئی اے کے پاس نجی تنازعات میں پڑنے کا اختیارنہیں۔

چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ وزیراعظم کے خطاب سے لگاتا انہیں کسی نے درست نہیں بتایا، ہتک عزت کا قانون پیکا سے الگ بھی موجود ہے، لگتا ہے وزیراعظم کی کسی نے ٹھیک سے معاونت نہیں کی۔

یہ بھی پڑھیں:آسٹریلین ٹیم کو دھمکی آمیز پیغامات ۔۔ پی سی بی نے نوٹس لے لیا

چیف جسٹس نے مزید کہا کہ ایف آئی اے صرف وفاقی حکومت سے تعلق بننے والے کیسز دیکھ سکتا، اسلام بھی اظہاررائے کی آزادی دیتا ہے۔یہاں توقانون نافذ ہی ناقدین کے خلاف کیا جاتا ہے۔عدالت نے ہدایت کی کہ ایف آئی اے ایس او پیزکی خلاف ورزی میں کوئی کارروائی نہ کرنے کو یقینی بنائے، دوبارہ سماعت 10 مارچ کو ہوگی۔

یہ بھی پڑھیں:روس اور یوکرین کے درمیان جنگ جاری۔ فوجیں کہاں پہنچ گئیں