ہم پیسے دیکر گئے تھے ۔ شوکت ترین کا وزیر خزانہ کے بیان پر رد عمل 

May 23, 2022 | 11:13:AM
 ہم پیسے دیکر گئے تھے ۔ شوکت ترین کا وزیر خزانہ کے بیان پر رد عمل 
کیپشن: سابق وزیر خزانہ اور سینیٹر شوکت ترین (فائل فوٹو)
Stay tunned with 24 News HD Android App
Get it on Google Play

 (24نیوز ) وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل کی جانب سے خزانہ خالی چھوڑ کر جانے کے دعوے پر رد عمل دیتے ہوئے سابق وزیر خزانہ اور سینیٹر شوکت ترین نے کہا کہ عوام کو سبسڈی دینے کیلئے ہم پیسے چھوڑ کر گئے تھے ، اب یہ تسلیم ہی نہیں کریں گے ،اتحادی حکومت کی فیس سیونگ نہیں ہوپارہی اس لئے پریشان ہے۔

شوکت ترین نے کہا کہ اتحادی حکومت لوگوں کو بےوقوف بنارہی ہے ، اگر قرضے بڑھےہیں توجی ڈی پی بھی بڑھی ہے،حکمران حواس باختہ ہوگئے ہیں ،ان کو سمجھ نہیں آرہی کیاکریں ، یہ 13 پارٹیز کی حکومت ہے ، معیشت درست کرے ، شوکت ترین کا کہنا تھا کہ ہمارے دور میں عالمی سطح پر پٹرول کی قیمتیں بڑھیں مگر ہم نے پھر بھی اس تناسب سے کم قیمتیں بڑھائیں ، پی ٹی آئی  نے ہر شعبے میں ن لیگ کو پیچھے چھوڑا ۔

یہ بھی پڑھیںعمران خان نے 21 ارب ڈالر قرضے لئے جو واپس کرنے ہیں: وزیر خزانہ

خیال رہے کہ آج صبح وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل نے کہا کہ  شوکت ترین کےدعوؤں پرہنسی آتی ہے،  سابق حکومت کوئی پیسہ نہیں چھوڑکرگئی،شوکت  ترین بتادیں کہاں پیسہ چھوڑکرگئے؟،  آپ کوئی پیسہ چھوڑکرنہیں گئے،   ہم آج بھی آٹا سستا دے رہے ہیں ، عمران خان کیوں نہ دے سکا ؟۔  مفتاح اسماعیل نے کہا ہے کہ قوم پٹرول کی قیمتوں میں اضافے کی متحمل نہیں ہو سکتی ، ہم نے سبسڈی کو ایک ماہ تک کھینچا ہے ،عمران خان نے 21 ارب ڈالر قرضے لئے جو پاکستان نے واپس کرنے ہیں ۔