میو ہسپتال یا ٹارچر سیل۔۔سکیورٹی سپروائزر فرعون بن گیا۔۔لواحقین پر تشدد کی ویڈیو وائرل

Sep 15, 2021 | 00:57:AM
میو ہسپتال یا ٹارچر سیل۔۔سکیورٹی سپروائزر فرعون بن گیا۔۔لواحقین پر تشدد کی ویڈیو وائرل

(مانیٹرنگ ڈیسک) میو ہسپتال میں مریض بیچارے علاج کی خاطر آتے ہیں مگر یہا ں  سکیورٹی سپروائزر،سکیورٹی گارڈز اور وارڈ اٹینڈنٹس کی جانب سے ہسپتال میں آنے والے افراد پر بدترین تشدد کا انکشاف ہوا ہے۔

تفصیلات کے مطابق  سکیورٹی سپروائزر ذوہیب اور اس کے عملے کی جانب سے شہریوں پر تشدد کی متعدد فوٹیجز بھی سامنے آئی ہیں۔ویڈیوز سامنے آنے پر ہسپتال انتطامیہ بھی حرکت میں آگئی اور متعلقہ افراد کے خلاف ایکشن لینے کا اعلان کیا۔

یہ بھی پڑھیں:سیالکوٹ۔۔ شوہر کے انتظار میں کھڑی خاتون کو اغوا کر نے کے بعد5 جنسی درندوں کا دل دہلادینے والا اقدام

 تھانہ گوالمنڈی کی چوکی میو ہسپتال پولیس نے مرکزی ملزم ذوہیب کو گرفتار کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔ ایس پی سٹی رضوان طارق کے مطابق ملزم میو ہسپتال میں سیکورٹی سپروائزر کے طور پر کام کرتا ہے۔ملزم ہسپتال سے شکایات ملنے پر معصوم لوگوں پر تشدد کرتا۔ملزم ہسپتال میں آنے والے غریب لوگوں پر تشدد کر کے باہر نکال دیتا۔ملزم کی ویڈیو وائرل ہونے پر فوری کاروائی عمل میں لائی گئی ۔ملزم ذوہیب کے خلاف مقدمہ درج کرکے تفتیش شروع کردی گئی ہے۔