ارکان اسمبلی کی گرفتاریاں، آغا رفیق اللہ نےپولیس کیساتھ کیاکیا؟

Mar 10, 2022 | 21:24:PM
جے یو آئی، ارکان اسمبلی کی گرفتاری، پولیس کی گاڑیاں، روک لیا، ٹائر سے ہوا، نکال دی
کیپشن: پارلیمنٹ لاجز کے باہر کی صورتحال
Stay tuned with 24 News HD Android App
Get it on Google Play

(24 نیوز)جمعیت علمائے اسلام (جے یو آئی)ارکان اسمبلی کی گرفتاری پر دیگر ممبران نے پولیس کی گاڑیوں کو روک لیا،آغا رفیق اللہ نے پولیس کی گاڑی کے ٹائر سے ہوا نکال دی۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد پولیس نے لارلیمنٹ لاجز میں آپریشن کے دوران ایم این اے جمال الدین اور صلاح الدین ایوبی کو گرفتار کرلیا،دھکم پیل میں سینیٹر کامران مرتضیٰ زخمی ہو گئے ۔پی ڈی ایم کے سربراہ مولانا فضل الرحمان بھی گرفتاری دینے کیلئے پارلیمنٹ لاجز پہنچ گئے ۔

قبل ازیں اسلام آباد پولیس نے انصار الاسلام کے رضاکاروں کی گرفتاری کیلئے جے یو آئی کے ایم این اے صلاح الدین ایوبی کے کمرے پر دھاوابول دیاتھا،پولیس اہلکار دروازے توڑ کر کمروں میں داخل ہو ئے،انصارالاسلام کے رضاکاروں کی گرفتاری کیلئے پارلیمنٹ لاجز کے گیٹ پر دھکم پیل ہوئی،دھکم پیل میں لیگی رہنما خواجہ سعد رفیق زخمی ہو گئے ،جس پر ایم این اے آغا رفیع اللہ اور پولیس میں سخت تکرارہوئی۔

ایاز صادق نے کہاکہ جب مذاکرات ہو رہے تھے ، پولیس کیسے اندر داخل ہوئی ؟ہم تمام ایم این ایز گرفتاری دیں گے، سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر آئے اور وہ ہم سے بات کریں ،اپوزیشن ممبران نے مطالبہ کرتے ہوئے کہاکہ پولیس پہلے پارلیمنٹ لاجز سے باہر جائے ،پولیس کس سے پوچھ کر لاجز میں داخل ہوئی ہے؟،خواجہ آصف، آغا رفیع اللہ بھی مولانا صلاح الدین کے لاج میں داخل ہو گئے۔

یہ بھی پڑھیں: ارکان اسمبلی کی گرفتاری ، جے یو آئی کی کارکنوں کو اسلام آباد پہنچنے کی کال