پی ٹی آئی اور ق لیگ کے اراکین اسمبلی کے حلقوں میں ترقیاتی منصوبوں کا پلان تیار

:By Ali Ramay
Jul 30, 2022 | 15:36:PM
پی ٹی آئی،مسلم لیگ ق،ایم این ایز،ایم پی ایز،ترقیاتی منصوبے،تیار
کیپشن: منصوبوں میں روڈ سیکٹر، ہیلتھ سیکٹر اور واٹر سپلائی اینڈ سینٹیشن کی اسکیمیں شامل ہیں/ فائل فوٹو، گوگل سورس
Stay tuned with 24 News HD Android App
Get it on Google Play

 (علی رامے) پی ٹی آئی اور ق لیگ کے اراکین اسمبلی کے حلقوں میں ترقیاتی منصوبوں کا پلان تیار کرلیا گیا۔ پنجاب حکومت 97 ارب روپے کا فنڈ اپنے اراکین اسمبلی پر نچھاور کرے گی۔

مسلم لیگ ن کی حکومت نے اپنے اور اتحادیوں کے اراکین اسمبلی کے حلقوں کے لیے جو فنڈ بجٹ میں رکھا وہ اب پی ٹی آئی کے اراکین اسمبلی کو دیا جائے گا۔

یہ بھی پڑھیں:شجاعت حسین کو پارٹی سے نکالنے کا معاملہ، بیٹے سالک کا بڑا بیان آگیا

 ذرائع نے بتایا ہے کہ اب لیگی اراکین اسمبلی کا فنڈ پی ٹی آئی کے اراکین اسمبلی کو ملے گا جس کے لیے ایم پی اے اور ایم این اے کو فنڈ دینے کا فارمولا طے کر دیا گیا ہے۔

 ایم پی اے اور ٹکٹ ہولڈر کو فوری طور پر فی کس 10 کروڑ روپے دئیے جائیں گے۔ پی ٹی آئی کے ایم این اے اور ٹکٹ ہولڈرز کو فی کس 20 کروڑ روپے دئیے جائیں گے۔

 پنجاب میں ق لیگ اور پی ٹی آئی کے ایم این ایز اور ایم پی ایز کو ہی یہ بجٹ ملے گا۔ پہلے کوارٹر میں 97 ارب روپے کا فنڈ حکومتی ارکان پر نچھاور ہوں گے۔ جس سے ان کے حلقوں میں نئے اور جاری منصوبوں کو مکمل کیا جائے گا۔

منصوبوں میں روڈ سیکٹر، ہیلتھ سیکٹر اور اربن ڈویلپمنٹ سمیت واٹر سپلائی اینڈ سینٹیشن کی اسکیمیں شامل ہیں جبکہ اراکین کو پی ایس ڈی پی سے بھی فنڈ نکال کر ایم این ایز کو دئیے جائیں گے۔

Ali Ramay

علی رامے سٹی نیوز نیٹ ورک سے وابستہ ایک سینئر تحقیقاتی رپورٹر ہیں۔ وہ 2013 سے اس گروپ سے وابستہ ہیں اور بنیادی طور پر پنجاب حکومت کے ماتحت محکموں میں تحقیقاتی اور دلچسپ  اسٹوریز کا احاطہ کرتے ہیں۔