حکومت نے عوام پر پھر پٹرول بم گرادیا

Jul 30, 2021 | 18:59:PM
حکومت نے عوام پر پھر پٹرول بم گرادیا

(24 نیوز)حکومت نے عوام پر ایک بار پھر پٹرول بم گرا دیا،وزیراعظم نے پٹرول کی قیمتوں میں اضافے کی منظوری دیدی، قیمتوں میں اضافے کا اطلاق کل رات12 بجے ہو گا۔

نوٹیفکیشن کے مطابق پٹرول کی فی لیٹر قیمت میں1.71 روپے جبکہ مٹی کے تیل میں 35 پیسے فی لیٹر اضافہ کیا گیا ہے تاہم ڈیزل کی قیمت میں کوئی ردوبدل نہ کیا گیا ہے۔

قیمتوں میں اضافے کے بعد پٹرول 119 روپے 80 پیسے فی لیٹر دستیاب ہوگا ،ہائی سپیڈ ڈیزل کی قیمت 116 روپے 53 پیسے ، لائٹ ڈیزل کی قیمت 84 روپے 67 فی لٹر برقراررکھی گئی ہے جبکہ مٹی کے تیل کی نئی قیمت 85 روپے 75 پیسے ہوگی۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پروزیراعظم کے مشیر شہباز گل کا کہنا تھا کہ 'اوگرا کی سفارش پر پٹرول کی قیمت میں فی لیٹر 1.71 روپے کا اضافہ کیا جا رہا ہے جبکہ ڈیزل کی قیمتوں میں کسی قسم کا اضافہ نہیں کیا جا رہا۔ ڈیزل کی قیمتوں میں اضافے سے عام آدمی اور کسان زیادہ متاثر ہوتا ہے اس لئے ڈیزل کی قیمتوں میں اضافے کی سمری مسترد کر دی گئی ہے۔'

واضح رہے کہ پٹرولیم ڈویژن کی جانب سے پٹرول کی قیمت میں ایک روپیہ 71 پیسے فی لیٹر اضافہ جبکہ ہائی سپیڈ ڈیزل کی قیمت میں 2 روپے 27 پیسے فی لیٹر جبکہ مٹی کے تیل کی قیمت میں 35 پیسے اور لائٹ ڈیزل کی قیمت میں 24 پیسے اضافے کی تجویز دی گئی تھی۔

یہ بھی پڑھیں:  افغانستان میں امن پاکستان کی دلی خواہش ،دشمنوں کو امن عمل کو متاثر کرنے کی اجازت نہیں دینگے: آرمی چیف